CHANGE & CORONA
URDU

CORONA AND ME!

BY ZAINAB

ISHFAQ

مجھے کورونا وائرس کی شدت کا احساس نہیں ہوا ، جب تک

  کہ میری والدہ پاکستان چلی گئیں اور کچھ دن بعد اسکول بند ہوگئے۔ اسکول بینڈ ہو گیا تے میری میری امی پاکستان میں تھیک تے، قرنطینہ کا پہلا ہفتہ اتنا برا نہیں تھا لیکن ، دوسرے ہفتے کے بعد چیزیں بدل گئیں اور مجھے کچھ چیزوں کا احساس ہونے لگا۔ اسکول بند ہونے سے اساتذہ نی آن لائن کام دینا شورو کاردیا اور یہ بہت کام تھا کیونکہ مجھے ہر اساتذہ سے کام مل رہا تھا۔ میرا دوسرا ہفتہ گزرتا گیا جب میں نے اسائنمنٹ مکمل کیے اور باقاعدگی سے پاکستان سے اپنی ماں کو فون کارتی راہی۔ تیسرا ہفتہ آگیا اور میری والدہ کو واپس آنا تھا لیکن پاکستان لاک ڈاؤن میں چلا گیا اور تمام پروازیں منسوخ کردی گئیں۔ میں اپنے والد اور بہنوں کے ساتھ تھی اور ہم سب فکرمند اورچین ہونے لگا۔ ہم ایک دوسرے سے تنگ آنا شروع ہوگئے اور ایسا کوئی کام نہیں کرنا چاہتے تھے جو ہماری ماں عام طور پر کرتی۔ اس وقت کے دوران ، میں نے محسوس کیا کہ میری والدہ اہل خانہ کے لئے کتنا کام کرتی ہے اور میں اور میں انکے لیئے کتنا شکر گزار ہوں۔ اس دوران میں نے پینٹنگ شروع کی۔ میں نے سورج کی تجاویز اور مناظر پینٹنگ سے اور وہاں کی تصویروں سے شروع کیا۔ 3 ہفتوں میں ، میں نے اپنے آپ کو پورٹریٹ اور اصلی آرٹ پینٹ کرنے کا طریقہ سکھایا۔ میں اب بھی پینٹنگ کرراہی ا ہوں اور بہتر ہونے کی کوشش کرراہی ہوں۔ میرا مشورہ ہے کہ ہم سب گھر ہی رہیں اور خود کو نئے مشغلے اور ہنر سیکھنے میں مصروف رہنے کی کوشش کریں۔ ہم  متحرک رہ کر اور اب بھی ایسی چیزیں کرتے ہوئے حوصلہ افزائی کرسکتے ہیں جو ہم کرتےتہہ اگر ہم مطالعاتی ، دوستوں کے ساتھ بات چیت کرنے اور ورزش کیوں کہ آخر کار ہمارے پاس زندگی گزارنے کے لئے ہے۔

I didn’t realize the severity of the Coronavirus, until my mother went to Pakistan and a couple of days later schools closed. Schools closed and my mother was well in Pakistan, the first week of quarantine was not that bad but, after the second week things changed and I began to realize some things. With schools closed teachers assigned work online and it was a lot of work since I was receiving work from every teacher. My second week went by as I completed assignments and regularly called my mom from Pakistan to see how she is. The third week arrived and my mom was supposed to come back but Pakistan went into a lockdown and all flights were cancelled. I was living with my dad and sisters and we all began to feel anxious and restless. We started to get tired of each other and didn’t want to do any of the chores that our mother would usually do. During this time, I realized how much my mom does for the family and I and how grateful I am to have her. During this time I began painting. I began from painting sunsets and landscapes and from there portraits. In 3 weeks, I taught myself how to paint portraits and real art. I am still painting and trying to get better. I advise that we all stay home and try to keep ourselves busy with learning new hobbies and talents. We can stay motivated by keeping active and still doing things that we would do if we were not in quarantine like studying, chatting with friends and exercising because in the end, we still have a life to live.